گلگت(پ ر)صوبائی حکومت کے ترجمان فیض اللہ فراق نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ بیوروکریسی سرکاری مشینری کا ایک اہم جزو ہے ، بیوروکریسی وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے ہر حکم کو ماننے کی پابند ہے۔موجودہ حکومت کی اب تک کی بہتر کارکردگی سیاسی قیادت اور بیوروکریسی کے باہمی اشتراک اور محنت کا نتیجہ ہے۔ دونوں اسٹیک ہولڈرز کے اشتراک سے خطے کی تاریخ میں پہلی بار اساتذہ اور پولیس کی بھرتیوں میں میرٹ کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے شفافیت سے کام لیا گیا ، تمام محکموں میں خالی اسامیوں کی اخبارات میں تشہیر سے عوام کا اعتماد حکومت پر بحال کرایا ہے۔ جی بی کی سیاسی تاریخ میں پہلی بار میڈیکل کالج قائم کیا جا رہا ہے اور انجینئرنگ کے مختلف شعبوں کا آغاز ہونے جا رہا ہے۔ موجودہ حکومت نے ضلع دیامر کے دور دراز علاقوں داریل و تانگیر اور ہنزہ نگر میں پاک فوج کی سرپرستی میں سابقہ ادوار کے کئی مردہ منصوبوں میں جان ڈال دی ہے اور سابق ادوار کے سینکڑوں مردہ منصوبوں کو موجودہ حکومت نے پایہ تکمیل تک پہنچایا ہے۔ایک سال کے قلیل عرصے میں 22سے زائد امور پر قانون سازی کی گئی ہے جوایک ریکارڈ ہے۔ اسمبلی کاکام قانون سازی ہے اس کو سابقہ ادوار میں کسی اور کام کے پیچھے لگا دیا گیا تھا جبکہ موجودہ حکومت نے صحت ، تعلیم ، بچےوں ، مزدوروں ، خواتین ، بلدیات اور دیگر اہم شعبوں میں قانون سازی کے ذریعے اسمبلی کی اصل روح کو بحال کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ حفیظ الرحمن کی اعلیٰ سوچ ، وژن اور میرٹ پر مبنی پالیسی بعض اوقات اپنوں کو بھی اچھی نہیں لگتی کیونکہ سچ ہمیشہ کڑوا ہوتا ہے لیکن موجودہ حکومت کی اولین ترجیحات میں میرٹ کی بالادستی شامل ہے جس پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔ موجودہ حکومت عملی کاموں پر یقین رکھتی ہے اس لئے اپوزیشن کی بلاجواز تنقید کا جواب دینے کے بجائے کام اور کردار کو آگے بڑھایا جائیگا جس امید اور توقعات سے گلگت بلتستان کے لاکھوں عوام نے مسلم لیگ ن پر اعتماد کیا ہے اس پر پورا اترنے کی ہرممکن کوشش کی جا رہی ہے۔ موجودہ حکومت کا ہدف اگلی نسل ہے۔aqa

Admin ApnaGilgitLocal NewsNews
گلگت(پ ر)صوبائی حکومت کے ترجمان فیض اللہ فراق نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ بیوروکریسی سرکاری مشینری کا ایک اہم جزو ہے ، بیوروکریسی وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے ہر حکم کو ماننے کی پابند ہے۔موجودہ حکومت کی اب تک کی بہتر کارکردگی سیاسی قیادت...